اترپردیش سوائن فلو کی زد میں ،حکومت اقدامات کے دعوو¿ں کے باوجود مریضوں کی تعداد میں اضافہ

لکھنو¿: اترپردیش کی یوگی حکومت کے ان دعوو¿ں کے باوجود کہ حکومت نے ریاست میں مہلک مرض سوائن فلو پر قابو پانے کے لیے ہر ممکن اقدامات کیے ہیں ریاست میں سوائن فلو کے مریضوں کی تعداد میں کوئی کمی واقع ہونے کے بجائے اس میں تیزی سے اضافہ ہی سننے میں آرہا ہے۔ راجدھانی لکھنو¿ میں سوائن فلو کے 38 اور نئے معاملے روشنی میں آنے کے بعد ریاست میں ان کی تعداد بڑھ کر 2545 ہوگئی ہے۔ غیر سرکاری اطلاعات کے مطابق یہ اعدادوشمار اس سے کہیں زیادہ ہیں۔ سرکاری ذرائع کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران لکھنو¿ میں سوائن فلو کے 38 نئے مریضوں کی تصدیق ہوئی ہے۔ یہاں سوائن فلو کے مریضوں کی تعداد بڑھ کر 1543 ہوگئی ہے۔ اس بیماری سے ریاست میں اب تک 60 سے زائد مریضوں کی موت ہوچکی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ غازی آباد میں 98 جبکہ میرٹھ میں سوائن فلو کے مریضوں کی تعداد 203 ہے۔ میرٹھ میں 15 سے زائد لوگوں کی اب تک موت ہوچکی ہے۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ ریاستی حکومت نے سوائن فلو کے علاج کے لئے پختہ انتظام کرنے کا دعویٰ کیا ہے لیکن اس کے باوجود آئے روز اس مرض میں مبتلا افرادکی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے۔ یہاں تک کہ لکھنو¿ میں خود کئی ڈاکٹر اور دیگر طبی عملہ بھی سوائن فلو کی زد میں ۔ سرکاری اسپتالوں میں مریضوں کی تعداد بڑھتی جارہی ہے۔

Title: swine flu death toll reaches 60 in uttar pradesh | In Category: صحت  ( health )