گڑکے مستقل استعمال سے کئی بیماریاں دور ہوتی ہیں

اس جدید دور میں نئی نسل ہی نہیں بلکہ پرانے لوگ بھی گڑ سے نہ صرف پرہیز کرتے ہیں بلکہ اسے دیہات اور گاو¿ں والوں کے لیے ہی مخصوص سمجھتے ہیں۔لیکن طبی نقطہ نظر سے دیکھا جائے تو یہی گڑ نہ صرف صحت بخش ہے بلکہ کئی بیماریوں کا علاج بھی ہے۔ گڑ گنے کے رس سے بنایا جاتا ہے۔جسے عربی میں فارلیذ،فارسی میں قندسیاہ بنگالی میں گڑاورانگریزی میں Jaggeryکہا جاتا ہے ۔کسان عام طور پر بیلنے کے ذریعہ گنے کا رس نکالتا ہے اور بعد میں اسے پکا کر گڑ بناتا ہے۔ گنے کے رس کو پکا کر جمالیا جاتا ہے۔ قوام کو سخت بنا کر ہاتھوں سے مل کر سفوف بنا لیں تو اس کو شکر سرخ کہتے ہیں۔ اس کا رنگ سرخ ہوتا ہے۔ بعض دفعہ رنگ سرخی مائل سیاہ اور زرد بھی ہوتاہے اور ذائقہ شیریں ہوتا ہے۔ اس کا مزاج گرم اور دوسرے درجے میں تر ہوتا ہے۔ پرانا گڑ گرم و خشک ہوتا ہے۔ اس کے درج ذیل فوائد ہیں۔
کھانے کو ہضم کرتاہے،طبیعت کو نرم کرتا ہے،بلغم کو چھانٹتا ہے،دمہ، کھانسی اور درد سینہ میں گڑکو کالی مرچ اور ادرک کے ہمراہ پکا کر کھانا بے حد مفید ہے،ہم وزن نمک اور شہد کو کوزہ میں بند کر کے گل حکمت کریں پھر اسے جلا کر چاٹنا کھانسی کے لیے مفید ہے،گوشت کو گلانے کے لیے اگر اس میں گڑ ڈال دیا جائے تو جلدی گل جاتا ہے،بعض معجونات میں اطبا ءکرام شہد کی بجائے گڑ کا قوام استعمال کرتے ہیں،جسم کو طاقت دیتا ہے اور موٹا کرتا ہے،ایک سال پرانا گڑ خون صاف کرتا ہے اور باہ کو بڑھاتا ہے۔ مگر اس کا زیادہ استعمال نقصان دہ بھی ہے،گڑ کا استعمال دانتوں اور خون کے لیے مضر ہے،گڑ چینی سے زیادہ مفید ہے اور اتنا نقصان دہ نہیں ہوتا۔گڑ جسم میں ہیمو گلوبین کی مقدار اور قوت مزاحمت میں اضافہ کرتاہے جس سے خون کے حوالے سے کئی بیماریاں و خرابیاں دور ہو تی ہیں۔گڑ جوڑوں کے درد اور ہڈیوں کی دیگر بیماریوں کو دور کر کے ہڈیوں کو مضبوط بناتا ہے۔گڑ کھانے سے جھریاں اور مسے اور تل دور ہوکر جسم کی کھال کو چمکدار اور چکنی کرتا ہے۔آملہ کے سفوف کے ساتھ روزانہ گڑ کھانے سے مردانہ کمزوریاں دور ہوتی ہیں۔ جسم میں توانائی آتی ہے اور پیشاب میں بے قاعدگی یا رک رک کر آنے کا مرض دور ہوتا ہے۔

Title: health benefits of jaggery gur | In Category: صحت  ( health )